New Museum keeping Munir’s fight for justice aliveانڈونیشین انسانی حقوق میوزیم

December 21, 2013

انڈونیشیاءکے انسانی حقوق کیلئے کام کرنے والے مقتول کارکن منیر سید طالب کے نام پر ایک میوزیم قائم کیا گیا ہے، منیر کو 2004ءدو ہزار چار میں ایک پرواز کے دوران قتل کردیا گیا تھا، اس میوزیم میں بھی منیر اور ان کے حل طلب قتل کے مقدمے سے متعلق چیزیں رکھی گئی ہیں۔ اسی بارے میں سنتے ہیں آج کی رپورٹ

منیر کی اہلیہ سو سی واتی نے انڈونیشیاءکا پہلا انسانی حقوق کا میوزیم اوما منیر قائم کیا ہے، انہیں توقع ہے کہ اس نوجوانوں کے اندر ان کے شوہر کی طرح ناانصافی کیخلاف جدوجہد کی حوصلہ افزائی ہوگی۔
سو سی واتی”ہم ایسے واقعات مزید نہیں ہوتے دیکھنا چاہتے، اس میوزیم کا مقصد یہ ہے کہ ہم منیر کو نہیں بھولے اور ایسی نئی نسل بنانا جاہتے ہیں جو بلند اخلاقی معیارات پر یقین رکھتی ہو”۔

اس میوزیم میں آنے والے منیر کے ملبوسات اور ذاتی استعمال کی چیزیں دیکھ سکتے ہیں، جبکہ دیواروں پر منیر کی جانب سے اٹھائے گئے انسانی حقوق کے مقدمات کی تفصیلات دی گئی ہیں، جو اب تک حل نہیں ہوسکے ہیں۔دا نانگ راہاجرو میوزیم کے قریب رہائش پذیر ہیں،وہ کہتے ہیں کہ میں نے میوزیم کا دورہ کرکے بہت کچھ جانا ہے۔
دا نانگ راہاجرو “بیشتر عام افراد ان مقدمات کے بارے میں کچھ نہیں جانتے تھے، مگر اب ہمارے پاس اس قسم کا منفرد میوزیم موجود ہے، ہمیں توقع ہے کہ اب ان مقدمات کو حل کیا جاسکے گا”۔
منیر کی اپنی موت کا مقدمہ تاحال حل نہیں ہوسکا ہے، انہیں جکارتہ سے ایمسٹرڈیم جانے والیانڈونیشیا فلائٹ میںآر سینک زہر دیکر قتل کیا گیا، جہاز کے پائلٹ پولی کیپرس بدھیہاری پریانتو کو اس قتل میں سزا سنائی گئی، تاہم منیر کے حامیوں کا کہنا ہے کہ پائلٹ تو اس منصوبے کا صرف پیادہ تھا، اصل ماسٹر مائنڈ کو تو چھوا بھی نہیں گیا۔ 2008ءمیں سرکاری انٹیلی جنس ایجنسی بی آئی این کے ڈپٹی چیئرمین موچدی پر واپرانجونو پر اس قتل کا حکم دینے کے خلاف مقدمہ شروع ہوا، تاہم جلد اسے بری کردیا گیا۔سو سی واٹی کو توقع ہے کہ نئے میوزیم سے منیر کے قتل پر نئی عوامی تحقیقات کا آغاز ہوگا۔
سو سی واٹی”قانون نافذ کرنے ادارے کچھ نہیں کررہے، ہم بھی اپنی کوششوں کے باوجوود کچھ نہیں کرسکے، مگر ہم اب بھی انصاف اور سچ کے متلاشی ہیں، سب سے اہم بات وہ معیار زندہ ہے جس پر منیر کو مانتا تھا”۔

اس میوزیم کی تعمیر کیلئے فنڈز گلوکار و شاعرگلین فریڈلی کے کنسرٹ سے جمع کیا گیا،گلین فریڈلی نے منیر کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے لو ویرئر گانا تیار کیا۔
گلین”میرے لئے اوما منیر میوزیم انڈونیشین اور عالمی برادری کیلئے ایک معلوماتی مرکز ہے،اوما منیر ایک میوزیم سے بھی زیادہ ہمارا ثقافتی مرکز ہے، ہم یہاں منیر کے بارے میں زیادہ سے زیادہ جان سکتے ہیں”۔
مالانگ کرپشن واچ کی عہدیدار یونی روچل جناح کا کہنا ہے کہ ہم اس میوزیم کو ایونٹس کے انعقاد کیلئے استعمال کررہے ہیں۔
U یونی روچل جناح”ہم اس میوزیم میں ہر ماہ مختلف ایونٹس کی منصوبہ بندی کررہے ہیں، ہم مقامی یونیورسٹی کے تھیٹر گروپس کیساتھ ملکر یہاں ڈراموں کا انعقاد کریں گے، اور جو لوگ میوزیم میں آئیں گے ان کیلئے ہم چیئرٹی باکس رکھیں گے، تاکہ عوامی فنڈز کو جمع کیا جاسکے”۔
سو سی واتی کو توقع ہے کہ ان کے مرحوم شوہر نوجوانوں کے اندر ناانصافی کے خلاف جدوجہد کا عزم بڑھانے کیلئے رول ماڈل بن سکیں گے۔
سو سی واتی”نوجوان نسل منیر کے ترکے، اس کی جدوجہد اور حقیقت پسندی کو آگے بڑھائے گی، یہ وہ چیزیں جنھیں ہم جاری رکھنا چاہتے ہیں اور جب نوجوان نسل اس ملک کی قیادت کیلئے آئے گی، تومنیر جیسے مزید عظیم لوگ بھی سامنے آئیں گے”۔

Category: Asia Calling | ایشیا کالنگ

Comments are closed.

burberry pas cher burberry soldes longchamp pas cher longchamp pas cher polo ralph lauren pas cher nike tn pas cher nike tn nike tn pas cher air max 90 pas cher air max pas cher roshe run pas cher nike huarache pas cher nike tn pas cher louboutin pas cher louboutin soldes mbt pas cher mbt pas cher hermes pas cher hollister pas cher hollister paris herve leger pas cher michael kors pas cher remy hair extensions clip in hair extensions mbt outlet vanessa bruno pas cher vanessa bruno pas cher vanessa bruno pas cher ralph lauren pas cher